Suno News
مریض باپ کی خواہش پر آئی سی یو میں بیٹیوں کا نکاح
Image
لکھنؤ: (ویب ڈیسک) انڈین ریاست اتر پردیش کے شہر لکھنوسے ایک جذباتی اور انوکھی خبر منظر عام پر آئی ہے جس نے سب کے دلوں کو چھو لیا ہے۔
 
 ایرا ہسپتال میں زیر علاج ایک مریض کی دل کو چھو لینے والی کہانی نے انسانیت اور محبت کی اعلیٰ مثال قائم کر دی ہے۔
 
مریض، جو کہ شدید بیماری کے باعث آئی سی یو میں داخل تھا، اپنی دو بیٹیوں کی شادی کا خواہش مند تھا۔
 
 اس کی اس آخری خواہش کو پورا کرنے کے لیے اسپتال انتظامیہ، بیٹیوں اور ان کے اہل خانہ نے مل کر ایک منفرد فیصلہ کیا۔ انہوں نے بیٹیوں کی شادی کی تقریب ہسپتال کے آئی سی یو میں ہی منعقد کرنے کا ارادہ کیا تاکہ بیمار باپ اپنی آنکھوں سے اپنی بیٹیوں کی شادی دیکھ سکے۔
 
یہ موقع نا صرف خاندان کے لیے بلکہ ہسپتال کے عملے اور مریضوں کے لیے بھی جذباتی تھا۔ جیسے ہی شادی کی تیاریاں شروع ہوئیں، آئی سی یو کا کمرہ ایک خوشیوں کے مرکز میں بدل گیا۔
 
 سادگی اور محبت بھری اس تقریب میں دلہنوں نے اپنے والد کے بستر کے قریب کھڑے ہو کر نکاح کیا۔ ہسپتال کے عملے نے بھی اس موقع پر تعاون کرتے ہوئے تقریب کو ممکن بنانے میں اہم کردار ادا کیا۔
 
شادی کے وقت پورے آئی سی یو وارڈ میں خوشی کی لہر دوڑ گئی اور وہاں موجود سبھی لوگ اس خاص لمحے کے گواہ بنے۔ خوشیوں کی آوازوں سے گونجتا آئی سی یو وارڈ ایک یادگار منظر پیش کر رہا تھا۔
 
ہسپتال کے عملے اور وہاں موجود مریضوں نے بھی اس جذباتی لمحے کو بھرپور محبت اور خوشی کے ساتھ منایا۔
 
یہ کہانی سوشل میڈیا پر تیزی سے وائرل ہو گئی اور ہر طرف سے مثبت ردعمل سامنے آنے لگا۔ لوگوں نے اس اقدام کی بھرپور تعریف کی اور اسے انسانیت کی ایک عظیم مثال قرار دیا۔
 
ہسپتال انتظامیہ کی اس انوکھی پہل کو سراہا گیا کہ انہوں نے مریض کی آخری خواہش کو پورا کر کے انسانیت کی اعلیٰ مثال قائم کی۔
 
لکھنؤ کے ایرا ہسپتال کی یہ کہانی اس بات کا ثبوت ہے کہ محبت اور انسانیت کی کوئی حد نہیں ہوتی اور ایسے لمحات ہمیں یاد دلاتے ہیں کہ زندگی میں سب سے اہم چیز محبت اور رشتوں کی قدر کرنا ہے۔
 
 اس انوکھی شادی کی تقریب نے نا صرف مریض کی آخری خواہش کو پورا کیا بلکہ اس نے ہم سب کو محبت اور انسانیت کی خوبصورت یاد بھی دلائی ہے۔