Suno News
ممبئی میں شدید بارش، کئی علاقے زیر آب
Image
ممبئی :(ویب ڈیسک)ممبئی میں اتوار کو ہونے والی شدید بارش کی وجہ سے کئی علاقے پانی میں ڈوب گئے۔ جس کی وجہ سے شہر کی لائف لائن کہلانے والی لوکل ٹرینوں کا آپریشن بھی متاثر ہو رہا ہے۔
 
 وزیر اعلیٰ ایکناتھ شندے نے صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے ایک اعلیٰ سطح میٹنگ کی ہے۔
 
بھارتی محکمہ موسمیات نے بھی شدید بارش کے پیش نظر یلو الرٹ جاری کر دیا ہے۔
 
ممبئی کے کئی ریلوے اسٹیشن اور پٹڑیوں پر پانی بھر گیا ہے۔ ٹریفک پولیس پانی میں محصور مسافروں کو بچانے میں مدد کر رہی ہے۔
 
خبر رساں ایجنسی اے این آئی کے مطابق برہان ممبئی میونسپل کارپوریشن (بی ایم سی) نے بتایا ہے کہ اتوار کی رات ایک بجے سے اگلی صبح سات بجے تک چھ گھنٹے میں ممبئی کے مختلف مقامات پر 300 ملی میٹر بارش ہوئی۔ ایک لاکھ سے زائد بارشیں ریکارڈ کی گئیں۔
 
شدید بارش کی وجہ سے کچھ نشیبی علاقے زیر آب آگئے اور مضافاتی ٹرین خدمات متاثر ہوگئیں۔ پیر کو بھی تیز بارش کے امکانات ہیں۔
 
طلبہ کو تکلیف سے بچانے کے لیے ممبئی کے تمام بی ایم سی، سرکاری، نجی اسکولوں اور کالجوں میں چھٹی کا اعلان کیا گیا ہے۔
 
سینٹرل ریلوے سے موصولہ اطلاع کے مطابق ممبئی ڈویژن کے مختلف ریلوے اسٹیشنوں پر پانی بھر جانے کی وجہ سے کئی ٹرینیں منسوخ کردی گئی ہیں۔
 
سینٹرل ریلوے کے جنرل منیجر رام کرن یادو نے نیوز ایجنسی این این آئی کو بتایا ، "رات سے موسلادھار بارش ہو رہی ہے۔ 6 گھنٹے میں 300 ملی میٹر سے زیادہ بارش ہو چکی ہے۔"
 
انہوں نے کہا، "ہم رات سے ہی صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور ٹرینوں کو چلانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ لیکن شدید بارش کی وجہ سے کرلا اور بھنڈوپ کے آس پاس خاص طور پر مین لائن پر پانی جمع ہے۔"
 
انہوں نے کہا، "یہاں وڈالا سے مانکھورد تک ہاربر لائن پر، چونا بھٹی کے ارد گرد بہت زیادہ پانی جمع ہونے کی وجہ سے اسے بند کر دیا گیا ہے، یہ خدمات متاثر ہوئی ہیں۔ سی ایس ٹی پر آنے والی ایکسپریس ٹرینیں پانی بھر جانے کی وجہ سے نہیں آ پا رہی ہیں۔ کچھ کو منسوخ کر دیا گیا ہے اور کچھ کو۔ موڑ دیا گیا ہے۔"