12 April 2024

Homeکاروبارمارکیٹ تجزیہسونے کی قیمتوں میں اضافہ

سونے کی قیمتوں میں اضافہ

سونے کی قیمتوں میں اضافہ

سونے کی قیمتوں میں اضافہ

کراچی:(ویب ڈیسک) عالمی منڈی میں سونے کی قیمت میں اضافے کے باعث پاکستان کی گولڈ مارکیٹس میں بھی سونے کی قیمتیں بڑھ گئیں۔

تفصیلات کے مطابق بین الاقوامی گولڈ مارکیٹ میں جمعہ کو فی اونس سونے کی قیمت 13 ڈالر کے اضافے 2045 ڈالر کی سطح پر آگئی جس کے بعد مقامی مارکیٹ میں بھی سونے کی قیمت میں اضافہ دیکھنے کو ملا۔

پاکستان کی صرافہ مارکیٹوں میں فی تولہ سونے کی قیمت 1300 روپے کے اضافے سے دو لاکھ 15 ہزار روپے اور فی دس گرام قیمت 1115 روپے کے اضافے سے ایک لاکھ 84 ہزار 328 روپے ہوگئی۔

گذشتہ روز سونے کی قیمت میں بڑی کمی ہوئی تھی، فی تولہ سونا 3600 روپے کمی سے 2 لاکھ 13 ہزار 700 روپے کا ہو گیا تھا، 10 گرام سونا 3087 روپے سستا ہو کر 183213 روپے کا ہوا تھا۔جبکہ دس گرام 22 قراط سونا 1 لاکھ 67 ہزار 945 روپے کا ہو گیا تھا، 22 ڈالر کمی سے دبئی بلین مارکیٹ میں سونا 2045 ڈالر فی اونس ہوا۔

گذشتہ روز صرافہ مارکیٹ میں سونے کی قیمت میں 600 روپے تولہ کمی دیکھنے میں آئی تھی، 24 قیراط سونے کی فی تولہ قیمت میں 600 روپے کمی ہوئی ہے جس کے بعد سونے کی قیمت 2 لاکھ 17 ہزار 300 روپے ہو گئی تھی۔

دوسری جانب سیاسی عدم استحکام کے باعث سٹاک مارکیٹ مسلسل مندی کا شکار رہی، رواں ہفتے مندی کی ہیٹرک مکمل ہو گئی، سرمایہ کار سیاسی صورتحال سے پریشان ہیں، کاروباری ہفتے کے تیسرے روز بھی انڈیکس میں 170 پوائنٹس کی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے بعد انڈیکس 63 ہزار 567 پر بند ہوا۔

یہ بھی پڑھیں:

سونے کی قیمت میں مزید کمی

دوسری جانب پاکستان غیر ملکی سرمایہ کاروں کے لئے پرکشش ملک بنتا جا رہا ہے،، رواں مالی سال کے چھ ماہ میں مجموعی طور پر 93 کروڑ 37 لاکھ ڈالر کی غیر ملکی سرمایہ کاری آئی۔ توانائی کے شعبے میں چین کی سرمایہ کاری 29 کروڑ 30 لاکھ ڈالر رہی۔

19 کروڑ ڈالر کی انویسٹمنٹ کے ساتھ ہانگ کانگ دوسرا بڑا سرمایہ کار رہا، برطانیہ نے 12 کروڑ 20 لاکھ ڈالر کی سرمایہ کاری کی۔تیل اور گیس کی تلاش کے شعبے میں 13 کروڑ، مالیاتی کاروبار میں 9 کروڑ اور پیٹرولیم ریفائننگ میں ساڑھے چار کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کی گئی۔

پاکستان میں پورٹ فولیو انویسٹمنٹ کا حجم 7 کروڑ ڈالر رہا جس میں بڑی سرمایہ کاری گورنمنٹ ٹریژریز میں کی گئی۔دسمبر میں غیر ملکی سرمایہ کاروں نے 24 کروڑ 33 لاکھ ڈالر انویسٹ کئے جو سالانہ بنیادوں پر 337 فیصد زیادہ ہے۔

Share With:
Rate This Article