23 February 2024

Homeتازہ ترینہزاروں برس قدیم نوادرات کی اسمگلنگ ناکام

ہزاروں برس قدیم نوادرات کی اسمگلنگ ناکام

ہزاروں برس قدیم نوادرات کی اسمگلنگ ناکام

ہزاروں برس قدیم نوادرات کی اسمگلنگ ناکام

راولپنڈی:(ویب ڈیسک) کسٹمز اہلکاروں نے ہزاروں برس قدیم نوادرات کی کوئٹہ سے اسلام آباد اسمگلنگ کی کوشش ناکام بنادی۔

کسٹمز حکام کے مطابق موٹر وے کے ذریعے کوئٹہ سے اسلام آباد آنے والی بس کو چونگی نمبر 26 پر روکا گیا، تلاشی لینے پر بس سے نوادرات برآمد ہوئے۔نوادرات بس میں سوار مسافر عبدالسلام کے تھے تاہم وہ ان نوادرات سے متعلقہ اپنے دستاویزات پیش کرنے میں ناکام رہا جس پر کسٹمز حکام نے بس اور نوادرات کو اپنی تحویل میں لے کر عبدالسلام کو گرفتار کرلیا۔

کسمٹز حکام کے مطابق اسمگل کیے جانے والے نوادرات میں مٹی کے برتن اور تانبے سے بنے کھدائی کے اوزار شامل ہیں جن کے بارے میں ماہرین کا کہنا ہے کہ ان کا تعلق 2600 سے 3500قبل مسیح کے دور سے ہے۔محکمہ آثار قدیمہ نے نوادرات کو اصل قرار دیا ہے اور ان کی انشورنس ویلیو پچاس لاکھ روپے بتائی ہے۔

کسٹمز کے مطابق ملزم کو گرفتار کر کے نوادرات اسمگلنگ ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا ہے اور اس کے دیگر ساتھیوں کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جارہے ہیں۔علاوہ ازیں 3500 قبل مسیح کے نوادرات بلوچستان سے افغانستان اسمگل کرنے کے امکانات کے متعلق بھی تحقیقات کی جارہی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:

چینی باشندے سے موبائل چھیننے والا گروہ گرفتار

دوسری جانب ایف آئی اے امیگریشن نے کراچی ایئرپورٹ پر کارروائی کرتے ہوئے بیرون ملک سے آنے والے مسافر کو گرفتار کرلیا، ملزم کے پاسپورٹ کے ویزا صفحات ٹمپرڈ شدہ تھے۔

ترجمان ایف آئی اے کے مطابق گرفتار ملزم نعیم اختر کا تعلق حافظ آباد سے ہے۔ابتدائی تفتیش میں معلوہوا ہے کہ ملزم پاکستانی پاسپورٹ اور اصلی ویزے پر نائجیریا گیا تھا جہاں ایجنٹ سے اٹلی کا ویزا حاصل کر کے اٹلی جانے کی کوشش کی۔

ملزم نے 22 لاکھ روپے کے عوض اٹلی کا ویزا حاصل کیا تھا۔جعلی ویزا ہونے کی بنا پر ملزم نائجیریا سے سعودی عرب اور پھر پاکستان آیا جبکہ سعودی عرب پہنچنے پر ملزم نے اپنے پاسپورٹ پر لگا جعلی ویزا پھاڑ دیا۔

ترجمان کا کہنا ہے کہ ملزم کو مزید قانونی کارروائی کے لیے اینٹی ہیومن ٹریفکنگ سرکل کراچی منتقل کر دیا گیا۔

دوسری جانب لاہور میں جرائم بے قابو ہوتا جا رہا ہے، پولیس بھی مجرموں کو پکڑنے میں ناکام دیکھائی دیتی ہے، رواں سال مختلف جرائم کے 3 لاکھ 15 ہزار 704مقدمات درج ہوئے ہیں۔

پولیس ریکارڈ کے مطابق سٹی ڈویژن 67 ہزار 866 مقدمات کے ساتھ پہلے نمبر پر ہے۔ماڈل ٹاؤن ڈویژن مقدمات کے اندارج میں 59 ہزار 785 مقدمات کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہا۔ کینٹ ڈویژن مقدمات کے اندراج میں 59 ہزار 172 مقدمات کے ساتھ تیسرے نمبر پرہے۔

یہ بھی پڑھیں:

معمولی تلخ کلامی پر بھائی کے ہاتھوں بھائی قتل

ریکارڈ میں بتایا گیاہے کہ صدر ڈویژن مقدمات کے اندارج میں 54 ہزار 434 مقدمات کے ساتھ چوتھے نمبر پر ہے، اقبال ٹاؤن ڈویژن مقدمات کے اندراج میں 41 ہزار 921 مقدمات کے ساتھ پانچویں نمبر پر ہے۔

سول لائن ڈویژن مقدمات کے اندارج میں 32 ہزار 526 مقدمات کے ساتھ چھٹے نمبر پر جبکہ شہرمیں پولیس ڈاکوؤں لٹیروں کے سامنے بے بس دکھائی دے رہی ہے۔

لاہور پولیس کے افسران بند کمروں میں ہی کرائم کنٹرول کرنے کی حکمت عملی بناتے رہے۔شہری لٹیروں ڈاکوؤں کے ہاتھوں گھروں کی دہلیز اور شاہراہوں پر دن رات لٹتے رہے ، انویسٹی گیش پولیس لاہور ملزمان تک پہنچنے میں ناکام رہی ہے۔

Share With:
Rate This Article