12 April 2024

Homeپاکستانسیاستاسد قیصر ضمانت کے بعد دوبارہ گرفتار

اسد قیصر ضمانت کے بعد دوبارہ گرفتار

اسد قیصر ضمانت کے بعد دوبارہ گرفتار

اسد قیصر ضمانت کے بعد دوبارہ گرفتار

صوابی: (سنو نیوز) پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور سابق اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کو ہفتے کے روز مردان کی ضلعی اور سیشن عدالت سے ضمانت حاصل کرنے کے بعد دوبارہ گرفتار کر لیا گیا۔

ہفتہ کو مردان کی ضلعی اور سیشن عدالت نے 9 مئی کے مقدمے میں 90,000 روپے کے ضمانتی مچلکوں کے عوض ضمانت منظور کی۔ تاہم اسد قیصر کی رہائی کے بعد صوابی پولیس نے انہیں ایم پی او کے تحت دوبارہ گرفتار کر لیا۔

اسد قیصر، جن پر گجو خان ​​میڈیکل کالج کے آلات کی خریداری میں کرپشن کا الزام ہے، کو 3 نومبر کو اسلام آباد کے بنی گالہ سے گرفتار کیا گیا تھا۔اے سی ای نے صوابی کے گجو خان ​​میڈیکل کالج کے لیے طبی آلات کی خریداری میں مبینہ بدعنوانی کے الزام میں مسٹر قیصر کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا۔

خیال رہے کہ تحریک انصاف کے سینئر رہنما اور عمران خان کے قریبی ساتھی اسد قیصر کو 3 نومبر 2023ء کو اسلا م آباد سے گرفتارکیا گیا تھا ۔ان کے بھائی نے ایک ویڈیو بیان جاری کیا جس میں انہوں نے دعویٰ کیا کہ اسد قیصر کو ان کی رہائشگاہ سے گرفتارکیاگیا ہے۔ انہوں نے کہا تھا کہ اسد قیصرسادہ لباس میں اہلکار گھر پر آئے اور ان کو گرفتار کرکے اپنے ساتھ لے گئے۔

اس سے قبل تحریک انصاف (پی ٹی آئی) وفد نے جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی)کے سربراہ مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کی تھی، اس وفد میں اسد قیصر اور انجینئر علی محمد بھی شامل تھے۔عمران خان کی گرفتار ی کے بعد ایک بیان میں اسد قیصر نے بڑا بیان دیتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان تحریک انصاف ہی میری جماعت ہے۔

یہ بھی پڑھیں:

جو کچھ عثمان ڈار کیساتھ ہوا، خواجہ آصف نے کرایا: اسد قیصر

اسلام آباد ہائیکورٹ میں پیشی کے موقع پر صحافی نے اسد قیصر سے سوال کیا کہ پرویز خٹک کے ساتھ جائیں گے یا پی ٹی آئی میں رہیں گے جس کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی میں ہوں اور پی ٹی آئی ہی میری جماعت ہے ،پرویز خٹک کے بیانات پر پارٹی نے جواب دے دیا ہے۔ صحافی نے پھر سوال کیا کہ پرویز خٹک نئی جماعت بنانے جارہے ہیں آپ انکے ساتھ ہیں یا پارٹی کے ساتھ؟جس پر اسد قیصر نے جواب دیا کہ میں پی ٹی آئی میں ہوں اور وہی میری جماعت ہے۔

سابق سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نےکہا کہ تھا آئین و قانون کی حکمرانی کے بغیر ملک اور سوسائٹی نہیں چل سکتی، پرویز خٹک کے بیان پر پارٹی نے اپنا موقف دیا ہے، اس بیان میں کوئی صداقت نہیں ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ خیبرپختونخوا کے عوام تحریک انصاف کے ساتھ کھڑے ہیں، جھنڈا مہم میں لوگ جوش و خروش کے ساتھ حصہ لے رہے ہیں،عوام کا جوش و خروش بتا رہا ہے کہ خیبرپختونخوا عمران خان اور پی ٹی آئی کے ساتھ ڈٹ کے کھڑا ہے،یہ حکمران ملک کے فیصلے بھی باہر ممالک میں کرتے ہیں۔

اسد قیصر نے کہا تھا کہ یہ ملک کے فیصلے لندن اور دبئی میں کرتے ہیں، آئی ایم ایف سے قرض لینے پر جشن منا رہے ہیں، آئی ایم ایف سے جو ڈیل ہوئی ہے اس کو پبلک کیا جائے،عوام کو بتایا جائے کہ مزید کتنی مہنگائی آئی گی کتنے ٹیکس لگیں گے، عوام دو وقت کی روٹی کے لئے ترس رہے ہیں۔

رہنما پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ بجلی، گیس سب چیزیں مہنگی کردی گئی ہیں، یہ کس منہ سے الیکشن میں عوام کے پاس جائے گے،بند کمروں میں انھوں نے فیصلے کیے کسی کو خیبرپختونخوا دیا کسی کو پنجاب اور سندھ دیا۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن میں پی ٹی آئی اکیلے ان سب کا مقابلہ کرے گی، الیکشن میں تمام پارٹیوں کو یکساں موقع دیا جائے، الیکشن ہمارا آئینی حق ہے ہمیں کوئی نہیں روک سکتا، تحریک انصاف الیکشن میں نہیں ہوگی تو پھر اس الیکشن کی حیثیت کیا ہوگی، کوئی اس الیکشن کو نہیں مانے گا کسی تسلیم نہیں کرے گا، تمام قوتوں سے مطالبہ کرتا ہوں کہ عوام کی رائے کا احترام کیا جائے۔

Share With:
Rate This Article