12 April 2024

Homeتازہ ترینپیٹ میں جمع چربی دور کرنے کے طریقے

پیٹ میں جمع چربی دور کرنے کے طریقے

پیٹ میں جمع چربی دور کرنے کے طریقے

پیٹ میں جمع چربی دور کرنے کے طریقے

لاہور: (سنو نیوز) آج کے دور میں پیٹ کی چربی ایک سنگین مسئلہ ہے، جو کئی بیماریوں کا سبب بن سکتا ہے۔ پیٹ کی چربی کو کم کرنے کے لیے بہت سے اقدامات کیے جا سکتے ہیں جن میں ورزش، متوازن خوراک اور ادویات شامل ہیں۔

ان اقدامات کے ساتھ ساتھ لہسن کا استعمال پیٹ کی چربی کو کم کرنے میں بھی مددگار ثابت ہوتا ہے۔ لہسن اپنی دواؤں کی خصوصیات کے لیے جانا جاتا ہے۔ اس میں اینٹی آکسیڈنٹ، اینٹی سوزش اور اینٹی بیکٹیریل خصوصیات پائی جاتی ہیں۔ لہسن کے استعمال سے کئی طرح کی بیماریوں سے بچا جا سکتا ہے۔ آئیے جانتے ہیں وزن کم کرنے کے لیے لہسن کا استعمال کیسے کریں۔

لہسن پاؤڈر:

لہسن کا پاؤڈر پیٹ کی چربی کو کم کرنے میں بھی مددگار ثابت ہوتا ہے۔ آپ لہسن کے پاؤڈر کو سبزیوں کے سالن، سوپ یا سلاد میں شامل کر کے کھا سکتے ہیں۔

لہسن کا قہوہ:

لہسن کا قہوہ پیٹ کی چربی کو کم کرنے میں بھی مددگار ثابت ہوتی ہے۔ لہسن کاقہوہ بنانے کے لیے ایک چائے کا چمچ لہسن کا پیسٹ ایک گلاس پانی میں ڈال کر ابالیں۔ قہوہ کو ٹھنڈا ہونے دیں اور پھر پی لیں۔

لہسن کی اسموتھی:

گارلک اسموتھی لہسن کھانے کا ایک غذائیت سے بھرپور اور مزیدار طریقہ ہے۔ لہسن کی اسموتھی بنانے کے لیے ایک گلاس دودھ یا دہی میں لہسن کی لونگ ڈالیں اور اس میں اپنی پسند کے پھل شامل کریں۔

لیموں لہسن پانی:

لیموں لہسن کا پانی اس کے استعمال کا ایک آسان اور موثر طریقہ ہے۔ لیموں لہسن کا پانی بنانے کے لیے ایک گلاس پانی میں آدھا لیموں اور پھر باریک کٹا لہسن ڈالیں۔

لہسن دہی ڈپ:

لہسن کا دہی ڈپ لہسن کھانے کا ایک مزیدار اور غذائیت سے بھرپور طریقہ ہے۔ لہسن کا دہی ڈپ بنانے کے لیے دہی میں پسی ہوئی ادرک اور اپنی پسند کا مصالحہ ڈالیں۔

خیال رہے کہ 40 سال کی عمر میں لوگ اپنی صحت کےبارے میں سوچنا شروع کر دیتے ہیں۔ آج ہم جو بھی زندگی گزار رہے ہیں، اس کے اثرات بڑھاپے میں دیکھ سکتے ہیں۔ اس لیے اگر ہم 60 سال بعد بھی تندرست رہنا چاہتے ہیں تو ہمیں اپنے طرز زندگی میں ضروری تبدیلیاں لانا ہوں گی۔ آئیے جانتے ہیں کہ ماہرین کس قسم کی تیاری کا مشورہ دیتے ہیں؟

ماہرین کا کہنا ہے کہ 40 سال کی عمر ایک ایسا وقت ہے جب جسم میں بہت سی تبدیلیاں آنا شروع ہو جاتی ہیں۔ اس لیے صحت کا خیال رکھنا اور طرز زندگی میں تبدیلی لانا بہت ضروری ہے۔

صحت مند غذا:

40 سال کے بعد صحت مند رہنے کے لیے صحت مند غذا کھانا سب سے اہم ہے۔ اپنی خوراک میں تازہ پھل، سبزیاں، اناج، کم چکنائی والے پروٹین اور کم چکنائی والی ڈیری مصنوعات شامل کریں۔ جنک فوڈ، میٹھے مشروبات اور پراسیسڈ فوڈز سے پرہیز کریں۔

باقاعدہ ورزش:

40 سالکے بعد صحت مند رہنے کے لیے باقاعدہ ورزش بھی ضروری ہے۔ ہفتے میں کم از کم 150 منٹ کی اعتدال پسند ایروبک ورزش کریں۔ اس کے علاوہ، ہفتے میں کم از کم دو بار پٹھوں کو مضبوط بنانے کی مشقیں کریں۔

مناسب نیند:

چالیس سال کے بعد صحت مند رہنے کے لیے کافی نیند لینا بھی ضروری ہے۔ بالغوں کو ہر رات 7-8 گھنٹے کی نیند کی ضرورت ہوتی ہے۔

تناؤ کم کریں:

تناؤ بڑی عمر کے بعد صحت کے مسائل کی ایک بڑی وجہ ہے۔ تناؤ کو کم کرنے کے لیے یوگا، مراقبہ یا دیگر آرام دہ تکنیکوں کی مشق کریں۔

باقاعدگی سے ہیلتھ چیک اپ کروائیں:

صحت مند رہنے کے لیے باقاعدگی سے ہیلتھ چیک اپ کروانا بھی ضروری ہے۔ اس سے آپ کو صحت کے کسی بھی مسئلے کا پتہ لگانے میں مدد ملے گی اور آپ جلد از جلد اس کا علاج کروا سکتے ہیں۔

Share With:
Rate This Article