12 April 2024

Homeتازہ ترینفیس بک اور میسنجرپر اینڈ ٹو اینڈ انکرپشن فیچر لانچ

فیس بک اور میسنجرپر اینڈ ٹو اینڈ انکرپشن فیچر لانچ

فیس بک اور میسنجرپر اینڈ ٹو اینڈ انکرپشن فیچر لانچ

کیلیفورنیا: (سنو نیوز) سوشل میڈیا کمپنی میٹا نے کہا ہے کہ اس نے اپنے فیس بک اور میسنجر پلیٹ فارمز پر نجی پیغامات کے تبادلے کے لیے خودکار اینڈ ٹو اینڈ انکرپشن فیچر شروع کیا ہے۔

اس کا مطلب ہے کہ ایسے پیغامات کو صرف بھیجنے والا اور وصول کرنے والا ہی دیکھ اور پڑھ سکتا ہے۔ تاہم اگر کوئی صارف اس پیغام کی اطلاع دیتا ہے تو اسے کوئی تیسرا شخص بھی دیکھ سکتا ہے۔ میٹا کا کہنا ہے کہ یہ فیچر صارفین کے لیے آن لائن پرائیویسی اور سیکیورٹی میں اضافہ کرے گا۔ لیکن حکومتوں اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے اس انکرپشن ٹیکنالوجی کی مخالفت کی ہے۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ یہ ٹیکنالوجی بچوں کو آن لائن جنسی استحصال سے بچانے کی صلاحیت کو بری طرح متاثر کرے گی۔ میٹا نے کہا ہے کہ اس انکرپشن فیچر کو مکمل طور پر شروع کرنے میں چند ماہ لگیں گے۔ منصوبہ ہے کہ آنے والے وقت میں یہ نیا فیچر انسٹاگرام پلیٹ فارم پر بھی فراہم کیا جائے گا۔

خیال رہے کہ اس سے قبل خبر آئی تھی کہ سوشل میڈیا ایپ کی مالک کمپنی میٹانے فیس بک اور انسٹا گرام کے درمیان میسجنگ فیچر کوصارفین کیلئے ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔2020 ء میں میٹا کی جانب سے کراس ایپ میسجنگ فیچر کو متعارف کرایا گیا تھا، مگر اس منصوبے کا اعلان2019 ء میں کیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:

میٹا کا صارفین کیلئے اہم فیچر ختم کرنیکا فیصلہ

اس وقت میٹا کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا تھا کہ سوشل میڈیا ایپ انسٹا گرام، واٹس ایپ اور فیس بک میسنجر کو اکٹھا کر دیا جائے گا تاکہ صارفین کسی ایک پلیٹ فارم سے دیگر ایپس کے صارفین سے بات کر سکیں۔

میٹا نے آغاز انسٹا گرام اور میسنجر میں کراس میسجنگ فیچر کے ذریعے کیا تھا ، مگر اب اسے ختم کرنیکا فیصلہ کیا ہے۔ صارفین کو انسٹا گرام ہیلپ سینٹر پیج میں کہا گیا ہے کہ کراس میسجنگ فیچر کو دسمبر2023 ء کے وسط میں ختم کر دیا جائے گا۔

کمپنی کی جانب سے یہ نہیں بتایا گیا کہ یہ فیصلہ کیوں کیا جا رہا ہے، مگر گوگل کی ایک رپورٹ میں کمپنی نے بتایا ہے کہ ایسا ممکنہ طور پر یورپی یونین کے ڈیجیٹل مارکیٹ ایکٹ کیوجہ سے کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ ڈی ایم اے کے تحت ٹیکنالوجی کمپنیوں کو چیٹ انٹرپورٹ ایبلٹی کو ممکن بنانا ہوگا، اس تبدیلی کے بعد کسی بھی میسجنگ ایپ جیسے واٹس ایپ کے صارفین دیگر ایپس جیسے ٹیلی گرام اور سگنل وغیرہ پر بھی دوستوں سے چیٹ کرسکیں گے۔

میٹا کی طرف سے ڈی ایم اے قانون کے تحت واٹس ایپ میں چیٹ انٹرپورٹ ایبلٹی کا فیچر متعارف کرائے جانے کا امکان ہے، ستمبر میں اس حوالے سے رپورٹ بھی سامنے آئی تھی کہ واٹس ایپ میں تھرڈ پارٹی چیٹ کے فیچر کی آزمائش کی جا رہی ہے، ڈی ایم اے قانون کا اطلاق 6 مارچ 2024 ء کو ہوگا۔

اس حوالے سے مکمل تفصیل جاننے کیلئے میٹا لنک پر کلک کریں:

Launching Default End-to-End Encryption on Messenger

Share With:
Rate This Article