27 February 2024

Homeتازہ ترینیاماہا موٹرسائیکل کی قیمتوں میں پھر بڑا اضافہ

یاماہا موٹرسائیکل کی قیمتوں میں پھر بڑا اضافہ

یاماہا کمپنی نے تمام موٹرسائیکلوں کی قیمتوں میں 14 ہزار کا اضافہ کردیا ہے

یاماہا موٹرسائیکل کی قیمتوں میں پھر بڑا اضافہ

لاہور:(ویب ڈیسک) یاماہا کمپنی نے موٹرسائیکل کی قیمتوں میں پھر بڑا اضافہ کر دیا ہے، مہنگائی سے پریشان عوام کو کہیں سے بھی کوئی ریلیف نہیں مل رہا ہے،عوامی سواری عوامی دسترس سے کوسوں دور ہوگئی ہے۔

یاماہا کمپنی نے تمام موٹرسائیکلوں کی قیمتوں میں 14 ہزار کا اضافہ کردیا ہے، یاماہا وائے بی زی ڈی ایکس 14 ہزار اضافے سے 4 لاکھ 54 ہزار کی ہوگئی، یاماہا وائے بی آر 14 ہزار اضافے سے 4 لاکھ 66 ہزار تک جا پہنچی ہے۔

وائے بی آر جی بلیک 14 ہزار اضافے سے 4 لاکھ 85 ہزار کی ہوگئی جبکہ وائے بی آر جی میٹ 14 ہزار اضافے سے 4 لاکھ 88 ہزار کی ہوگئی ہے۔

دوسری جانب سوزوکی ،یاماہا کی موٹرسائیکلز کی قیمتیں بڑھنے سے سیلز میں بھی کمی ہو گئی ہے، مقامی ڈیلرز کیلئے روزمرہ کے اخراجات پورے کرنا نہایت مشکل ہوگیا، دونوں کمپنیوں کی موٹر سائیکلز کی قیمتیں ساڑھے 3 لاکھ سے لیکر5 لاکھ سے زائد ہیں۔

دوسری جانب ڈیلرز اور صارفین نے سوزوکی اور یاماہا موٹرسائیکلیوں کی قیمتیں کم کرنے کا مطالبہ کیا ہے، ڈالر کی قدر میں کمی باوجود نئی موٹرسائیکلوں کی قیمتوں میں اضافے کے زیراثر پرانی موٹرسائیکلوں کی قیمتیں بھی بڑھ گئی ہیں، قیمتوں میں اضافے کے باعث سیکنڈ ہینڈ بائیکس کی خرید و فروخت کا کاروبار ٹھنڈا پڑ گیا۔

مزید پڑھیں

مہنگائی میں ہوشربا اضافہ

پرانی بائیکس کی قیمتوں میں بھی 40 فیصد تک اضافہ ہوگیا ہے جس سے خریدار اور دکاندار دونوں ہی پریشان ہیں۔

تاجروں کا بھی کہنا ہے کہ گذشتہ سال 70 سے 75 ہزار روپے میں ملنے والی موٹرسائیکل اب 90 ہزار سے ایک لاکھ تک ہے، موٹرسائیکلوں کی قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے کاروبار ٹھپ ہو کر رہ گیا ہے، موٹرسائیکل مہنگی ہونے کی وجہ سے کوئی خریدار بھی نہیں آتا۔

Share With:
Rate This Article