Homeتازہ ترینفٹبال ورلڈ کپ 2034: آسٹریلیا دستبردار، سعودی عرب کیلئے راہ ہموار

فٹبال ورلڈ کپ 2034: آسٹریلیا دستبردار، سعودی عرب کیلئے راہ ہموار

فٹبال ورلڈ کپ

فٹبال ورلڈ کپ 2034: آسٹریلیا دستبردار، سعودی عرب کیلئے راہ ہموار

ریاض:(ویب ڈیسک) سعودی عرب کے لیے فٹبال ورلڈ کپ 2034 کی میزبانی کے لیے آسٹریلیا کی دستبرداری کے بعد راہ ہموار ہوگئی ہے۔

عالمی خبررساں ایجنسی کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سعودی عرب فٹبال ورلڈ کپ 2034 کی میزبانی کے لیے واحد امیدوار رہ گیا ہے کیونکہ آسٹریلیا نے ڈیڈلائن ختم ہونے سے قبل اس بات کی تصدیق کی ہے کہ وہ فٹبال ورلڈ کی میزبانی کے لیے امیدوار نہیں ہے۔

رپورٹ کے مطابق فٹبال کی عالمی گورننگ باڈی (فیفا) نے ایشیا اور اوشیانا سے ورلڈ کپ کی میزبانی کی بولی کے لیے 31 اکتوبر 2023کی ڈیڈ لائن دی تھی۔

فٹبال آسٹریلیا کے سربراہ جیمز جانسن کا کہنا تھا کہ وہ 2034 ورلڈ کی میزبانی کے لیے مواقع ڈھونڈ رہے تھے لیکن منگل کو ڈومیسٹک گورننگ باڈی نے کہا کہ وہ ویمنز ایشین کپ 2026 اور کلب ورلڈ کپ 2029 کی میزبانی پر اپنی تمام تر توجہ مرکوز کرینگے۔


آسٹریلیا کیجانب سے ورلڈ کپ 2034 کی میزبانی کیلئے بولی لگانے سے دستبرداری کے بعد سعودی عرب واحد ملک ہے جو فیفا ورلڈ کپ 2034 کی میزبانی کرنے کا خواہش مند ہے، سعودی عرب اس وقت اپنی رضا مندی ظاہر کی تھی جب فیفا نے 4 اکتوبر کو ایشیا اور اوشیانا کیلئے میزبانی کی بولی طلب کی تھی۔

دوسری جانب ایشین فٹ بال فیڈریشن کے صدر کا کہنا ہے کہ ایشیا کی پوری فٹبال فیملی متفقہ طور پر سعودی عرب کی حمایت کے لیے کھڑی ہے۔

فیفا کے اعلان کے ایک ہفتے بعد انڈونیشیا نے کہا تھا کہ وہ ملائیشیا اور سنگاپور کیساتھ مشترکہ بولی کے حوالے سے آسٹریلیا سے تبادلہ خیال کر رہے ہیں تاہم اسکے ایک ہفتے بعد کہا کہ وہ سعودی عرب کی حمایت کر رہے ہیں۔

واضح رہے کہ آسٹریلیا نے رواں برس ویمنز فٹبال ورلڈ کی کامیاب میزبانی کی ہے لیکن تاحال مردوں کے فٹبال ورلڈ کپ کی کھبی میزبانی نہیں کی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: میسی نے آٹھویں مرتبہ بہترین فٹبالر کا ایوارڈ ‘بیلن ڈی اور’ جیت لیا

فٹبال آسٹریلیا نے بیان میں کہا کہ ہمیں یقین ہے کہ ہم ویمنز انٹرنیشنل مقابلوں اے ایف سی ویمنز ایشین کپ 2026 اور پھر فیفا کلب ورلڈ کپ 2029 میں فٹبال کی دنیا کی عظیم ٹیموں کی میزبانی کے مضبوط امیدوار ہیں۔


بیان میں مزید کہا گیا کہ یہ اعزاز حاصل کرکے حقیقی معنوں میں آسٹریلیا کی فٹبال کی گولڈن دہائی ہوگی، فیفا نے ورلڈ کپ 2030 کی میزبانی مراکش، پرتگال اور سپین کو دے دی ہے اور اس کے علاوہ ورلڈ کپ کے صدسالہ مقابلوں میں یوروگوئے، ارجنٹینا اور پیراگوئے بھی شامل ہیں۔

سپورٹس اینڈ رائٹس الائنس اور ایمنسٹی انٹرنیشنل نے فیفا سے کہا تھا کہ 2030 اور 2034 ورلڈ کپ کی میزبانی حاصل کرنے کیلئے ان ممالک کو انسانی حقوق کی صورتحال بہتر بنانا ہوگی تاکہ بدترین ہراسانی سے بچا جا سکے۔

ایمنسٹی انٹرنیشنل کے سوشل جسٹس اور اقتصادیات کے سربراہ اسٹیو کوکبرن نے بیان میں کہا کہ ہر ٹورنامنٹ کیلئے بولی میں صرف ایک ملک رکھ کر فیفا اپنے مقاصد حاصل کر رہا ہے، فیفا کو اب یہ واضح کرنا ہوگا کہ میزبان ملک
انسانی حقوق سے متعلق اپنی پالیسیوں پر کیسے عمل درآمد کرے گا اور اسکے لیے بھی تیار رہنا چاہیے کہ اگر سنجیدہ نوعیت کی انسانی حقوق کیخلاف ورزیوں کا تدارک نہ کیا گیا تو میزبانی کی بولی روک لی جائے گی۔

Share With:
Rate This Article