Suno News
دودھ کیلئے جانوروں کو لگایا جانے والا انجکشن خطرناک
Image
لاہور: (ویب ڈیسک) ملک کے مختلف حصوں میں خطرناک انجیکشن کے ذریعے بھینسوں میں دودھ کی پیداوار میں اضافہ معمول بن گیا ہے۔ رپورٹس کے مطابق گائے اور بھینسوں کو ان کے دودھ کی پیداوار بڑھانے کے لیے آکسیٹوسن کا انجیکشن لگایا جاتا ہے۔

 رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ ان جانوروں کو زیادہ دودھ پیدا کرنے پر مجبور کرنے کے لیے آکسیٹوسن کا غلط استعمال کیا جا رہا ہے۔ اس عمل سے جانوروں کو شدید تکلیف ہوتی ہے۔

 

مزید یہ کہ اس دودھ کا استعمال انسانوں کے لیے صحت کے خطرات کا باعث بنتا ہے۔ اس طرح کے نقصان دہ طریقے نہ صرف جانوروں کی فلاح و بہبود کو متاثر کرتے ہیں بلکہ انسانی صحت کو بھی خطرے میں ڈالتے ہیں۔

 

انجیکشن لگا کر دودھ زیادہ کرنے سے جانوروں کے ساتھ ساتھ وہی دودھ انسانوں کیلئے بھی مضر صحت ہے اس سے مختلف قسم کی بیماریاں اور پچیدگیاں جنم لیتی ہیں۔