12 April 2024

Homeتازہ ترینیاماہا کمپنی نے موٹر سائیکل کی قیمت میں اضافہ کر دیا

یاماہا کمپنی نے موٹر سائیکل کی قیمت میں اضافہ کر دیا

یاماہا کمپنی موٹر سائیکل ’وائی بی آر جی‘/ فائل فوٹو

یاماہا کمپنی نے موٹر سائیکل کی قیمت میں اضافہ کر دیا

کراچی: (ویب ڈیسک) یاماہا کمپنی کی طرف سے اپنی موٹر سائیکل ’وائی بی آر جی‘ کی قیمت میں 18 ہزار روپے اضافہ کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق وائی بی آر 125جی (سرخ اور سیاہ) کی قیمت 4 لاکھ 53 ہزار روپے تھی جو اس اضافے کے بعد 4 لاکھ 71 ہزار روپے ہوگئی ہے۔

اسی طرح وائی بی آر 125 جی (میٹ ڈارک گرے اور میٹ اورنج) کی قیمت 4 لاکھ 56 ہزار روپے تھی جو اب 4 لاکھ 74 ہزار روپے ہو گئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال کے دوران یاماہا موٹرسائیکلز کی فروخت میں نمایاں کمی ہوئی ہے۔ اس کے باوجود کمپنی کی طرف سے اپنی اس مقبول موٹرسائیکل کی قیمت میں اضافہ کر دیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں

ہونڈا اٹلس کمپنی کا پاکستانیوں کیلئے بڑا اعلان

یاد رہے کہ ہونڈا اٹلس نے پاکستان میں کارووبار کے 60 برس مکمل ہونے کے بعد الیکٹرک بائیک متعارف کرانے کا اعلان کیا۔

جاپانی برانڈ ہونڈا نے پاکستان میں کاروبار کے 60 سال مکمل ہونے پر شیخوپورہ میں قائم فیکٹری میں منعقدہ تقریب میں الیکٹرک بائیک متعارف کرانے کا اعلان کیا۔ خصوصی تقریب میں ایگزیکٹو وائس پریذیڈیٹ ہونڈا موٹر کمپنی شنجی آؤیاما، چیف آفیسر موٹر سائیکل اینڈ پاور پراڈکٹس نوریاکی ابے اور ایشین ہونڈا موٹر کمپنی کے صدر اور سی ای او توشیوکوواہارا نے شرکت کی۔

اٹلس ہونڈا کے چیف آفیسر موٹرسائیکل اینڈ پاور پراڈکٹس نوریاکی ابے نے ہونڈا کی الیکٹرک موٹرسائیکل ہونڈا ”ای بینلے” آزمائشی بنیادوں پر پاکستان میں متعارف کرانے کا اعلان کیا اور کہا کہ ہونڈا کی مصنوعات پاکستان کی آبادی کے بڑے طبقے کی روز مرہ زندگی کا حصہ بن چکی ہیں، ہونڈا پاکستانی معاشرے اور صارفین کے فیڈ بیک کو سمجھتے ہوئے ان کی ضرورتوں کے مطابق نئی مصنوعات متعارف کرانے کا ارادہ رکھتی ہے۔

ایگزیکٹو وائس پریذیڈیٹ ہونڈا موٹر کمپنی شنجی آؤیاما نے پاکستان میں ہونڈا کے کاروبارکو بڑھانے میں اٹلس گروپ، اٹلس ہونڈا ایسوسی ایٹس، ڈیلرز اینڈ آٹو پارٹس مینوفیچکررز کو پاکستان میں ہونڈا کی کاوشوں کو خراج تحسین پیش کیا۔

ایشین ہونڈا موٹر کمپنی کے صدر اور سی ای او توشیوکوواہارا نے اٹلس ہونڈا کے پورے ایکو سسٹم کو 60 سال مکمل ہونے پر مبارکباد پیش کی اور کہا کہ پاکستان ایک اہم مارکیٹ ہے اور ہونڈا پاکستانی صارفین کے لیے پرکشش مصنوعات متعارف کرانے کے لیے کوشاں ہے۔

اٹلس ہونڈا کے صدر اور سی ای او ثاقب ایچ شیرازی نے کمپنی کی کارکردگی کا جائزہ پیش کرتے ہوئے فروخت، لوکلائزیشن، پرزہ جات کے کاروبار، روزگار اور قومی خزانے کو ٹیکسوں کی ادائیگی کا احاطہ کیا۔

انہوں ںے کہا کہ اٹلس ہونڈا 95 فیصد پرزہ جات مقامی سطح پر تیار کر رہی ہے اور کمپنی نے پاکستان میں پرزہ جات بنانے والوں اور ڈیلرزز کا سب سے بڑا نیٹ ورک تشکیل دیا ہے، ہماری کوشش ہے کہ عوام کو آرام دہ سفری سہولت مہیا کی جائے۔

Share With:
Rate This Article