Homeتازہ ترینڈالر 1 روپے 18 پیسے مہنگا

ڈالر 1 روپے 18 پیسے مہنگا

انٹربینک میں ڈالر

ڈالر 1 روپے 18 پیسے مہنگا

کراچی :(سنونیوز)انٹربینک میں ڈالر نے روپے کو آنکھیں دکھانا شرو ع کردی،روپے کی نسبت ڈالر کی قدر میں 1 روپے 18 پیسے اضافہ ہوگیا ہے۔

کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی طلب نے روپے کو بے حال کر دیا، ڈیمانڈ اور سپلائی میں عدم توازن کے باعث ڈالر کی قیمت میں اضافے کا تسلسل جاری ہے۔انٹربینک میں ڈالر مزید ایک روپے 18 پیسے مہنگا ہو کر 282 روپے 65 پیسے پر بند ہوا، اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت ایک روپے اضافے کے بعد 284 روپے ہو گئی ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ درآمدی بل کی ادائیگیوں پر ڈالر کی طلب میں اضافہ ہوا ہے، ڈالر کی خریداری میں اضافے سے روپیہ دباؤ کا شکار ہے، گذشتہ روز ڈالر 281 روپے 47 پیسے پر بند ہوا تھا۔

گذشتہ روز ڈالر کی قیمت میں 50 پیسے اضافہ ہوا تاہم کرنسی مارکیٹ میں دیگر کرنسی کی بات کی جائے تو یورو 298 روپے جبکہ برطانوی پاؤنڈ 344 روپے پر مستحکم رہا۔

ڈالر کی قیمت میں جہاں ایک طرف اضافہ دیکھنے کو ملا وہیں دوسری طرف اماراتی درہم 30 پیسے کمی کے بعد 79.20 روپے پر آ گیا جبکہ سعودی ریال 40 پیسے کمی سے 75 روپے 50 پیسے کا ہو گیا ہے۔

گذشتہ روز اوپن مارکیٹ میں ڈالر 1 روپے مہنگا ہوگیا تھا، اوپن مارکیٹ میں ڈالر 282 روپے 50 پیسے کا ہو گیا تھا، انٹربینک میں بھی ڈالر کی قدر میں 43 پیسے کا اضافہ ہوا تھا، انٹربینک میں ڈالر 281 روپے کا ہو گیا تھا جبکہ گذشتہ ہفتے ڈالر 280 روپے 57 پیسے پر بند ہوا تھا۔

دوسرے ممالک کی کرنسی کو دیکھیں تویورو بھی 1 روپے اضافے سے 298 روپے کا ہوگیا، برطانوی پاؤنڈ 50 پیسے مہنگا ہو کر 343.50 روپے کا ہوگیا جبکہ اماراتی درہم 30 پیسے مہنگا ہوکر 79.50 روپے کا ہوگیا اورسعودی ریال 40 پیسے اضافے سے 75 روپے 90 پیسے کا ہوگیا۔

یہ بھی پڑھیں: وزارتِ خزانہ کیجانب سے اکتوبر کی معاشی آؤٹ لک رپورٹ جاری

کرنسی مارکیٹ میں روپے کی پانچ ہفتوں سے قائم اجارہ داری کو بڑا دھچکا لگا۔ ڈالر نے دو ہفتوں سے جو سر اٹھانا شروع کیا ، اس سے روپے پر دباؤ بڑھ گءا۔ مارکیٹ میں طلب اور رسد میں عدم توازن کے باعث اس ہفتے بھی ڈالر مسلسل مہنگا ہوتا رہا۔

انٹربینک میں ڈالر کی قیمت ایک روپیہ 77 پیسے اضافے کے بعد 280 روپے 57 پیسے پر بند ہوئی جبکہ اوپن مارکیٹ میں ڈالر ڈیڑھ روپیہ مہنگا ہو کر 281 روپے 50 پیسے پر پہنچ گیا۔

Share With:
Rate This Article